Quora: سیکھنے، سکھانے کی دنیا

میں نے اپنا پہلا سمارٹ فون 2014ء میں لیا اور اس کا استعمال شروع کیے مجھے چند ہفتے ہی گزرے تھے جب میرے اندر یہ احساس پیدا ہوا کہ یہ صاحب جتنا وقت بچاتے ہیں اس سے کہیں زیادہ ضائع کرا دیتے ہیں۔ 2017ء میں بالاآخر اس بلاء سے نجات حاصل کی اور سادہ فون پر منتقل ہوا، تب سے الحمداللہ ایک سکون سا میسر ہے کہ کم ازکم ٹیکنالوجی وقت کے ضیاع کا باعث نہیں بن رہی۔ لیکن بعض دفعہ دور دراز کے سفر میں کسی ایسی ڈیوائس کی ضرورت پڑ جاتی ہے جو کہ کہیں بھی لے جانے میں آسان ہو اور اس کی مدد سے انٹرنیٹ بھی استعمال کیا جا سکے، اس مقصد کے لیے میں نے ایک ٹیبلٹ رکھا ہوا ہے جو کہ ایسے موقعوں پر تو کام آتا ہی ہے، تفریح کے اوقات میں ہم (میں اور میری بیوی) اس سے تفریحی آلے کا کام بھی لیتے ہیں۔

چند روز قبل ایک قریب دوست اس ٹیبلٹ کا جائزہ لے رہے تھے جب انہیں اس کے اندر Quora نامی ایپ نظر آئی، پوچھنے لگے یہ Quora کیا بلاء ہے اور ساتھ ہی یہ کہ ٹیبلٹ  میں فیس بک اور ٹوئٹر وغیرہ کیوں نہیں ہیں؟ تو آج کی یہ تحریر اسی سوال کا جواب کہ Quora کیا ہے اور ہمیں فیس بک وغیرہ کی نسبت اس ایپ کوکیوں وقت دینا چاہیے؟

میں نے گزرے برسوں میں یہ سیکھا ہے کہ سیکھنے کے دو طریقے کمال ہیں، ایک سوال پوچھنا اور دوسرا جواب دینا (جو خود کو آتا ہے اسے دوسروں کو سکھانا)۔ Quora یہ دونوں کام بہترین اور احسن طریقے سے کرتا ہے۔ یہ سوال جواب کی ایک ویب سائیٹ ہے جس پر آپ کسی بھی موضوع پر سوال پوچھ سکتے ہیں اور دوسروں کے پوچھے ہوئے سوالات کا جواب دے سکتے ہیں۔ یہاں پر اپنے اپنے شعبے کے ماہرین آپ کے سوالات کا مفت جواب دینے کے لیے موجود ہیں۔ آپ نے بس یہ کرنا ہے کہ Quora پر اپنا اکاؤنٹ بنانا ہے اور پھر ان موضوعات کو فالو کرنا شروع کر دینا ہے جن کے متعلق آپ  سیکھنا یا جاننا چاہتے ہیں۔ اب آپ جب بھی Quora کی ویب سائیٹ یا ایپ کھولیں گے آپ کے سامنے آپ کے من پسند موضوعات پر ماہرین کے جوابات موجود ہوں گے، بس انہیں پڑھیے اور علم میں اضافہ کیجیے۔ جو جواب آپ کو میعاری لگے آپ اسے Upvote کر سکتے ہیں، اسی طرح غیر متعلقہ اور Spammy جوابات کو DownVote کیا جا سکتا ہے۔ آپ موضوعات کے ساتھ ساتھ ان موضوعات کے ماہر افراد یا وہ لوگ جن کے جوابات آپ کو بہت پسند ہیں، انہیں بھی فالو کر سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں :   زندگی سے بھاگم بھاگ کو کم کیجیے اور زندگی کا لطف اٹھائیے

اگر آپ کے ذہن میں کسی موضوع پر سوال اٹھتا ہے اور وہ سوال Quora پر موجود نہیں ہے تو آپ خود سے بھی سوال پوچھ سکتے ہیں، سوال پوچھتے ہوئے بالکل نہ ہچکچائیے اور جیسا بھی سوال آپ کے ذہن میں آئے، اسے پوچھ ڈالیے۔ آپ سوال پوچھنے کے ساتھ ساتھ Quora پر پوچھے گئے سوالات کے جوابات بھی دے سکتے ہیں، سیکھنے کا ایک بہترین طریقہ دوسروں کو سکھانا ہے اور Quora پر سوالات کے جواب دینا سکھانے ہی کی ایک شکل ہے۔ اگر آپ بلاگنگ یا کوئی اور آن لائن کاروبار کرتے ہیں تو Quora آپ کے لیے ویب سائیٹ ٹریفک کا ایک بہترین ذریعہ ثابت ہو سکتا ہے، اس کے ساتھ ساتھ Quora کے ذریعے آپ اپنے آپ کو  کسی مخصوص شعبے میں Authority بھی بنا سکتے ہیں۔

2017ء تک،  Quora  کے ذریعے میں بس سوالات پوچھتا رہا یا پھر دوسروں کے پوچھے گئے سوالات کے جوابات پڑھ کر سیکھنے کی کوشش کرتا رہا۔ لیکن اس سال سے اب میں نے تہیہ کر رکھا ہے کہ Quora پر پوچھے گئے سوالات کے جواب بھی دینے ہیں، اس طرح سے میں اپنے علم میں اضافے کے ساتھ ساتھ اپنی English Writing کو بھی بہتر بناؤں گا۔ آپ بھی اپنے موبائل سے فیس بک، ٹوئٹر  اور Pinterest جیس ایپس کو ان انسٹال کیجیے اور Quora کو اپنے موبائل یا ٹیبلٹ میں جگہ دیجیے۔

کیا آپ سادہ، آسان اور پُرسکوں زندگی کے خواہاں ہیں؟
اپنا ای میل ایڈریس درج کیجیے اور میرا ہفتہ وار ای میل نیوز لیٹر جوائن کیجیے

احباب کے ساتھ شیئر کیجیے

Share on facebook
فیس بک
Share on twitter
ٹوئٹر
Share on google
گوگل پلس
Share on email
ای میل
فیس بک
ٹوئٹر
گوگل پلس
ای میل

اپنی رائے کا اظہار کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

error: !!معذرت، کاپی کی اجازت نہیں