آپریٹنگ سسٹم کیا ، کیوں، کیسے؟

2008ء میں پہلی بار جب میرا کمپیوٹر سے واسطہ پڑا تو حقیقت یہ ہے کہ میں آپریٹنگ سسٹم نامی کسی بھی شے سے نابلد تھا۔ میں نے اپنی والدہ کی سخاوت کی بدولت ایک پرانا پی4 کمپیوٹر خریدا تھا جس کے اندر ونڈو ایکس پی اس کے سابقہ مالک نے انسٹال کر رکھی تھی اور مجھے کافی دنوں بعد جا کے پتا چلا کہ ونڈو ایکس پی کو آپریٹنگ سسٹم کہتے ہیں۔ وقت گزرا اور پھر رسمی تعلیم اسی کمپیوٹر کے شعبے میں ہوئی اور پھر قدرت نے رزق بھی اسی کے ساتھ منسلک کردیا ۔  آج یونہی دل میں خیال آیا کہ میری طرح بہت سے افراد ہوں گے جو او ایس یا آپریٹنگ سسٹم نامی اس بلا سے واقفیت نہیں رکھتے ہوں گے۔ سو اس کے مختصر اور جامع تعارف کے ساتھ حاضر ہوں۔

آپریٹنگ سسٹم کسی بھی کمپیوٹر میں موجود وہ بنیادی سافٹ ویئر ہوتا ہے جو کمپیوٹر، یوزر اور کمپیوٹر میں موجود دیگر سافٹ ویئرز کے درمیان مڈل مین یا رابطہ کار کا کردار ادا کرتا ہے۔ آپریٹنگ سسٹم کو ریسورسز مینیجر بھی کہا جاتا ہے، یہ کمپیوٹر کے تمام ہارڈویئر اور سافٹ ویئر کو کنٹرول کرتا ہے اور ہر سافٹ ویئر کو ریسورسز کی جتنی مقدار درکار ہوتی ہے وہ اسے مہیا کرتا ہے۔

آسان لفظوں میں یوں کہ آپریٹنگ سسٹم وہ سافٹ ویئر ہوتا ہے جو ہم انسانوں یعنی کمپیوٹر یوزرز سے ان کی زبان میں ہدایات لیتا ہے اور پھر کمپیوٹر کو وہ ہدایات اس کی زبان مشین لینگوئج یا جناتی زبان میں سمجھاتا ہے اور پھر کمپیوٹر کی جانب سے ملنے والی آؤٹ پٹ یا نتائج کو انسانی سمجھ میں باآسانی آ جانے والی زبان میں یوزر کو سمجھاتا ہے۔

آپریٹنگ سسٹم کے بنیادی کام

آپریٹنگ سسٹم کا ایک بنیادی کام رابطہ کار کا کردارتو میں نے اوپر موجود تعریف میں بیان کردیا ہے، اس کے علاوہ آپریٹنگ سسٹم اور بھی بہت سے کام کرتا ہے جن میں سے چند اہم کا م یہ ہیں۔
میموری مینجمنٹ: آپریٹنگ سسٹم میموری یعنی ریم کو مینج کرتا ہے۔ کس پروگرام کو کس وقت کتنی ریم چاہیے اس کا تعین یہی کرتا ہے اور اس پروگرام کو وہ ریم مہیا کرکے باقی ریم کا حساب رکھتا ہے۔
پراسیس مینجمنٹ: کمپیوٹر کے دماغ یعنی سی پی یو کی مینجمنٹ بھی آپریٹنگ سسٹم کی ایک اہم ذمہ داری ہے۔
ڈیوائس مینجمنٹ: کمپیوٹر کے ساتھ ہم جو مختلف ڈیوائسز منسلک کرتے ہیں جیسے ماؤس، کی بورڈ اور ویب کیم وغیرہ ان کے اور کمپیوٹر کے درمیان رابطہ کاری کا فریضہ بھی آپریٹنگ سسٹم ادا کرتا ہے۔
فائلز مینجمنٹ: کمپیوٹر میں موجود مختلف اقسام کی فائلز کا انتظام و انصرام بھی آپریٹنگ سسٹم کی ذمہ داری ہے۔

ڈیسک ٹاپ اور موبائلز کے لیے دستیاب مشہور و معروف آپریٹنگ سسٹم

اس وقت ڈیسک ٹاپ اور لیپ ٹاپ کی دنیا میں جو آپریٹنگ سسٹم راج کر رہا ہے ہے وہ مائیکروسافٹ کا ونڈو آپریٹنگ سسٹم ہے، اس کے علاوہ ایپل کا میک او ایس اور لینکس دیگر اہم آپریٹنگ سسٹمز ہیں۔
مائیکرو سافٹ ونڈوز
مائیکروسافٹ کمپنی کا بنایا گیا آپریٹنگ سسٹم ونڈو اس وقت دنیا کے قریباً 90 فیصد کمپیوٹرز میں استعمال ہو رہا ہے۔ونڈو 10،ونڈو 8.1، ونڈو 8، ونڈو 7 اور ونڈو ایکس پی ونڈوز کے اہم ورژن ہیں۔ اس وقت مائیکرو سافٹ صرف ونڈو 10 کو فروخت کر رہا ہے لیکن تا وقت تحریر سب سے زیادہ استعمال ہونے والا آپریٹنگ سسٹم ونڈو 7 ہے۔ ونڈو ایک تجارتی سافٹ ویئر ہے اور اس کی تازہ ترین قیمت پندرہ ہزارکے لگ بھگ ہے لیکن پاکستان اور برصغیر کے ملکوں میں بالخصوص اور پوری دنیا میں باالعموم اسے چوری کر کے استعمال کیا جاتا ہے۔ جو کہ باعث شرم ہے لیکن افسوس کہ اسے باعث فخر سمجھا جاتا ہے۔

ونڈو کو ایک آسان اور یوزر فرینڈلی آپریٹنگ سسٹم سمجھا جاتا ہے، لیکن یہ صرف کہنے کی بات بھی ہو سکتی ہے، حقیقت کچھ اور بھی ہو سکتی ہے۔ ونڈو کوئی بہت زیادہ قابلِ بھروسہ آپریٹنگ سسٹم نہیں ہے، یہ کسی بھی وقت آپ کو دغا دے سکتا ہے۔ ونڈوز کے ساتھ وائرسز کو لازم و ملزوم سمجھا جاتا ہے۔مائیکروسافٹ پر یوزرز کی پرائیویسی میں مداخلت کے بھی الزامات لگائے جاتے ہیں۔
میک او ایس
یہ آپریٹنگ سسٹم ایپل نے اپنے میک کمپیوٹرز کے لیے بنا رکھا ہے اور آپ ونڈو کی طرح اس کا علیحدہ سے لائسنس خرید کر اپنے سسٹم میں انسٹال نہیں کر سکتے بلکہ یہ صرف ایپل کے بنائے ہوئے سسٹمز (میک بک پرو، میک بک ایئر، آئی میک، میک منی وغیرہ) پر پہلے سے انسٹال ہوتا ہے اور آپ کو یہ استعمال کرنے کے لیے ایپل کا کمپیوٹر خریدنا پڑتا ہے۔ اس وقت اس کا تازہ ترین ورژن میک او ایس سیریا ہے جو 2016ء میں جاری کِیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں :   10 پلگ انز جو ہر ورڈپریس ویب سائیٹ میں انسٹال ہونے چاہئیں [ویڈیو]

میک بہت عمدہ آپریٹنگ سسٹم ہے لیکن اس کی قیمت کے باعث یہ ہر ایک کی پہنچ میں نہیں۔ دنیا کے دیگر ممالک کی نسبت امریکہ میں اس کے استعمال کنندگان کی تعداد کافی زیادہے ۔ پروفیشنل حضرات اور کمپنیز کے ہاں اس کا استعمال عام ہے۔ یہ ایک شاندار او ایس ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ ایک سٹیٹس سمبل بھی ہے جس کی وجہ سے اس کی قیمت ناجائز حد تک زیادہ ہے۔
لینکس
اوپر درج کردہ دونوں آپریٹنگ سسٹم تجارتی ہیں اور انہیں لائسینس کے بغیر استعمال کرنا اخلاقاً، قانوناً اور شرعاً جائز نہیں لیکن لینکس ایک مفت اور اوپن سورس آپریٹنگ سسٹم ہے اور آپ اس کو انٹرنیٹ سے ڈاؤنلوڈ کر کے اپنے کمپیوٹر میں انسٹال کر سکتے ہیں۔ یہ نہ صرف مفت ہے بلکہ اوپن سورس بھی ہے یعنی آپ اس کا کوڈ بھی نیٹ سے ڈاؤنلوڈ کر سکتے ہیں اور اس میں مختلف تبدیلیاں کر کے نئے نام سے ایک نیا آپریٹنگ سسٹم جاری کر سکتے ہیں۔
لینکس ایک بہت آسان اور ہلکا پھلکا آپریٹنگ سسٹم ہے اور یہ ہر وہ کام کر سکتا ہے جو ایک عام یوزر ونڈوز اور میک آپریٹنگ سسٹم کی مدد سے کرتا ہے۔ لینکس کے اوپن سورس ہونے کی وجہ سے مختلف کمپنیوں نے اسے مختلف ناموں سے جاری کر رکھا ہے جو کہ لینکس ڈسٹرو کہلاتی ہیں، آپ انہیں ونڈوز کے مختلف ورژنز کی طرح لے سکتے ہیں۔ مشہور و معروف لینکس ڈسٹروز میں اوبنٹو، لینکس منٹ، ڈیبین اور آرچ لینکس شامل ہیں۔

لینکس ونڈو آپریٹنگ سسٹم سے کہیں زیادہ یوزر فرینڈلی اور میک سے زیادہ مضبوط اور شاندار او ایس ہے، یہ آزادی، پرائیویسی، سیکورٹی اور طاقت کا مظہر ہے۔ اس وقت دنیا کے ٹاپ 500 سپر کمپیوٹرز کے اندر یہی او ایس استعمال ہو رہا ہے۔ ڈیسکٹاپ کی نسبت سرورز پر اس کا استعمال عام ہے۔ بنکوں اور دیگر حساس اداروں میں اس کا استعمال عام ہے۔ اس کے ڈیسک ٹاپ صارفین کی تعداد ماضی میں کافی کم رہی ہے لیکن اب بہت تیزی سے بڑھ رہی ہے۔

کون سا آپریٹنگ سسٹم سب سے اچھا ہے؟

اس سوال کا جواب آپ کی ضرورت اور بجٹ پر ہے۔ اگر آپ نے ویڈیو ایڈیٹنگ اور گرافکس جیسے کام کرنے ہیں اور آپ کے پاس اچھی رقم موجود ہے تو میک او ایس آپ کے لیے بہتر ہے۔ درمیانے بجٹ کے ساتھ ونڈو اور اگر آپ کے پاس بجٹ بہت کم ہے تو لینکس بہترین چوائس ہے۔
یاد رکھیں آپریٹنگ سسٹم جو بھی استعمال کریں لیکن اس کو قانونی طریقے سے ہی استعمال کریں یعنی اس کا لائیسینس خرید کر۔ اور اگر آپ کے پاس لائیسینس خریدنے کی سکت نہیں ہے تو لینکس آپ کی اول ترجیح ہونا چائیے یہ بہت شاندار، قابلِ بھروسہ اور طاقت ور آپریٹنگ سسٹم ہے اور عام گھریلو استعمال سے لے کر گرافکس اور ویڈیو ایڈیٹنگ جیسے کام بہت پروفیشنل انداز میں کر سکتا ہے۔
اگر آپ چوری کی ونڈو استعمال کر رہے ہیں تو سوچیے کہ کہیں آپ جانے انجانے میں قانون شکنی کرتے ہوئے کسی جرم کے مرتکب تو نہیں ہورہے۔ مجھے یقیناً یہ بات دہرانے کی ہر گز ضرورت نہیں کہ جرم صرف قانونی ہیں نہیں ہوتا، اخلاقی جرم قانونی جرم سے اگر بڑاجرم نہیں تو ہر گز چھوٹا جرم بھی نہیں۔
نیچے کمنٹس کیجیے اور ضرور بتائیے کہ آپ کونسا آپریٹنگ سسٹم استعمال کرتے ہیں؟ اگر آپ کوئی تجارتی او ایس استعمال کرتے ہیں تو کیا آپ نے اس کا لائیسینس خرید رکھا ہے؟ اگر آپ غیرقانونی طور پر کوئی او ایس استعمال کر رہے ہیں تو میں نہایت عاجزی کے ساتھ اسے ترک کرنے کا مشورہ دوں گا۔ نیچےکمنٹس میں ضرور بتائیے کہ کب آپ ونڈو کا لائیسینس خرید رہے ہیں یا پھر مفت او ایس لینکس پر منتقل ہو رہے ہیں۔ اگر آپ پہلے سے ہی لینکس کے یوزر ہیں تو اس کے متعلق اپنا تجربہ بھی شیئر کیجیے۔

کیا آپ سادہ، آسان اور پُرسکوں زندگی کے خواہاں ہیں؟
اپنا ای میل ایڈریس درج کیجیے اور میرا ہفتہ وار ای میل نیوز لیٹر جوائن کیجیے

احباب کے ساتھ شیئر کیجیے

Share on facebook
فیس بک
Share on twitter
ٹوئٹر
Share on email
ای میل
فیس بک
ٹوئٹر
ای میل

اپنی رائے کا اظہار کریں