لینکس آپریٹنگ سسٹم ۔ کیا، کیوں، کیسے؟

لینکس ونڈوز یا میک کی طرح ایک آپریٹنگ سسٹم ہے لیکن اسے بہت سے حوالوں سے اول الذکر دونوں آپریٹنگ سسٹمز پر برتری حاصل ہے۔ یہ مفت، اوپن سورس اور قابلِ بھروسہ ہے۔آج لینکس او ایس موبائل فون، ڈیسکٹاپ، سرورز، الیکڑانگ کی اشیاء، گاڑیوں غرض یہ کہ ہر جگہ استعمال ہو رہا ہے۔ چند دن قبل ایک خبر انٹرنیٹ پر کافی وائرل ہوئی کہ دنیا کہ ٹاپ 500 سپر کمپیوٹرز پر لینکس آپریٹنگ سسٹم استعمال ہو رہا ہے۔ اس سے آپ اندازہ لگا سکتے ہیں کہ لینکس کتنا شاندار آپریٹنگ سسٹم ہے۔

آپریٹنگ سسٹم کے بنیادی جز کرنل کو جسے لینکس او ایس میں لینکس کرنل کہا جاتا ہے، کو لینس ٹوروالڈز(Linus Torvalds) نے نوے کی دہائی میں لکھا اور اس کا کوڈ مفت جاری کر دیا۔ وقت کے ساتھ ساتھ لینکس او ایس میں بے شمار تبدیلیاں آئیں۔ اوپن سورس ہونے کی وجہ سے دنیا بھر سے رضاکارانہ طور پر پروگرامرز نے اس آپریٹنگ سسٹم کی ڈیویلپمنٹ میں حصہ لیا اور اس کو ایک شاندار او ایس کی شکل دی۔
لینکس کے متعلق بے شمار غلط خیال لوگوں کے ذہنوں میں پائے جاتے ہیں۔ عام لوگ تو ایک طرف کمپیوٹر اور ٹیکنالوجی سے منسلک کئی افراد اس کو ایک مشکل آپریٹنگ سسٹم خیال کرتے ہیں۔ لوگ سمجھتے ہیں کہ لینکس او ایس کے اندر شاید ہر کام کے لیے لمبی چوڑی کمانڈز لکھنی پڑتی ہیں جب کہ حقیقت میں ایسا بالکل بھی نہیں ہے۔ لینکس ایک بہت آسان آپریٹنگ سسٹم ہے۔ ہر او ایس کی طرح اس میں بھی آپ کو مشکل پیش آ سکتی ہے لیکن اس او ایس کی کمیونٹی بہت فعال ہے اور آپ کی مدد کے لیے ہمہ وقت تیار بھی۔
لینکس آزادی کا نام ہے۔ ونڈو یا دیگر آپریٹنگ سسٹم میں اگر آپ کو کچھ پسند نہیں تو آپ اس کو بدل نہیں سکتے، آپ استعمال کرنا چھوڑ دیں یا کوئی اور سافٹ ویئر خریدیں۔ لینکس کے اندر ایسا بالکل نہیں، آپ کو جو پسند نہیں اسے بدل دیجیے۔ یہاں آپ کے پاس انتخاب کی آزادی ہے۔ لینکس کے بے شمار ذائقے یا ڈسٹروز موجود ہیں، آپ اپنے ذوق اور سہولت کے مطابق ڈسٹرو کا انتخاب کر سکتے ہیں۔

ایک شخص جب ونڈو یا میک کو چھوڑ کر لینکس او ایس پر منتقل ہوتا ہے تو اس کا واسطہ لینکس کی مختلف اصطلاحات جیسے لینکس ڈسٹرو یا ڈسٹروبیوشن، ڈیسک ٹاپ انوائرمنٹ اور شیل وغیرہ  سے پڑ سکتا ہے، یہاں میں آپ کو ان کے متعلق مختصراً بتاؤں گا۔

لینکس ڈسٹروز:

لینکس او ایس پر سب سے پہلے جس اصطلاح سے آپ کا واسطہ پڑتا ہے وہ ڈسٹروبیوشن یا ڈسٹرو ہے تو سب سے پہلے میں آپ کو اسی کے متعلق بتاتا ہوں۔ آپریٹنگ سسٹم ایک سے زیادہ اجزاء پر مشتمل ہوتا ہوتا ہے، کمرشل آپریٹنگ سسٹمز کے تمام حصے عموماً ایک ہی کمپنی بناتی ہے۔ لینکس اوایس ونڈو یا میک کی طرح کوئی ایک کمپنی نہیں بناتی بلکہ اس آپریٹنگ سسٹم کے مختلف حصوں پر مختلف افراد اور آرگنائزیشن کام کرتی ہی اور پھر ان کو اوپن سورس قرار دے کر جاری کر دیتی ہیں۔ آپ چاہیں تو آپریٹنگ سسٹم کے مختلف حصوں جیسے کہ لینکس کرنل، ڈیسکٹاپ انوائرمنٹ، گنو شیل، ایکس سرور، مختلف یوٹیلٹی پروگرامز اور دیگر سافٹ ویئر کا کوڈ لے کر ان کی مدد سے ایک نیا آپریٹنگ سسٹم اپنے لیے بنا سکتے ہیں لیکن یہ ایک مشکل کام ہے۔ لینکس ڈسٹروبیوشن کمپنی جیسے کہ اوبنٹو یا لینکس منٹ آپ کا یہ مشکل کام آسان کرتی ہیں۔ وہ او ایس کے مختلف حصوں کو ملا کر ایک او ایس تشکیل دیتی ہیں، اس کے مسائل کو حل کرتی ہیں اور پھر اسے آئی ایس او فائل کی شکل دے کر مفت ڈاؤنلوڈ کے لیے جاری کر دیتی ہیں۔ جس کے بعد کوئی بھی شخص اس کو یو ایس بی یا سی ڈی میں برن کر کے انسٹال کر سکتا ہے۔ اس وقت لینکس کی بے شمار ڈسٹروز موجود ہیں، ان کی رینکنگ اور مقبولیت آپ DistroWatch پر دیکھ سکتے ہیں۔ وہ افراد جو لینکس پر نئے نئے منتقل ہوئے ہیں یا منتقل ہونے کا سوچ رہے ہیں  وہ میری تحریر مبتدی حضرات کے لیے لینکس کی پانچ بہترین ڈسٹروز ضرور دیکھیں۔

ڈیسک ٹاپ انوائرمنٹ:

جب آپ کمپیوٹر یا لیپ ٹاپ کو آن کرتے ہیں اور وہ بوٹ ہونے کے بعد استعمال کے لیے تیار ہوتا ہے تو سب سے پہلے جو سکرین آپ کے سامنے آتی ہے اسے ڈیسک ٹاپ کہتے ہیں۔ ڈیسک ٹاپ انوائرمنٹ سے مراد آپ کسی بھی آپریٹنگ سسٹم کا ظاہری ماحول لے سکتے ہیں۔ ٹاسک بار کہاں ہو، ٹائم کہاں ہونا چاہیے، سٹارٹ مینیو ہو یا نہ ہو، اگر ہو تو کہاں ہو، بنیادی پروگرام جیسے فائل مینیجر، کنفگریشن ٹولز کونسے ہونے چاہئیں، آئکن اور دیگر گرافیکل ڈیزائن کیسے ہوں، یہ تمام چیزیں ڈیسک ٹاپ انوائرمنٹ کاحصہ ہوتی ہیں۔ اس وقت لینکس کے لیے GNOME, Cinnamon, KDE, XFCE اور دیگر ڈیسک ٹاپ انوائرمنٹ دستیاب ہیں۔

شیل:

لینکس کمانڈ لائن کو شیل یا The Shell بھی کہتے ہیں، یہ لینکس کا وہ حصہ ہے جس کے ذریعے لینکس کے استعمال کنندگان آپریٹنگ سسٹم کو کمانڈز کے ذریعے کنٹرول کر سکتے ہیں۔ یہ وہ چیز ہے جس کی وجہ سے بہت سے افراد لینکس استعمال کرنے سے ڈرتے ہیں۔ دو چیزیں یاد رکھیں پہلی یہ  کہ جدید لینکس ڈسٹروز میں یوزر کو کمانڈ کو ہاتھ لگانے کی بھی ضرورت نہیں پڑتی سارے کام GUI کے ذریعے ہی ہو جاتے ہیں اور دوسری یہ کہ کمانڈ لائن بہت طاقتور ٹول ہے اس کے ذریعے گھنٹوں کے کام منٹوں میں ہو سکتے ہیں اور اسے سیکھنا بالکل بھی مشکل نہیں، سو اگر آپ لینکس کے Power User بننا چاہتے ہیں تو اسے ضرور سیکھیں۔

یہ بھی پڑھیں :   لینکس آپریٹنگ سسٹم پر یوٹیوب سے ویڈیوز ڈاؤنلوڈ کرنے کا طریقہ

لینکس کیوں استعمال کریں؟

ہمارے ہاں لوگوں کی بڑی تعداد ونڈو آپریٹنگ سسٹم کو استعمال کرتی ہے پر شرمناک حقیقت یہ ہے کہ یہ لوگ (میں بھی مدتوں تک انہیں میں سے ایک رہا) ونڈو کو خرید کر نہیں بلکہ چوری کر کے استعمال کرتے ہیں۔ آپ کو پتا ہونا چاہیے کہ ونڈو او ایس کی قیمت آج کل قریب 15000 روپے ہے۔ اگر آپ 50 یا 100 روپے کی ڈی وی ڈی سے ونڈو کو انسٹال کر رہے ہیں یا آپ نے انٹرنیٹ کی کسی ٹورنٹ سائیٹ سے اس کو ڈاؤنلوڈ کیا ہے تو یہ عمل پائریسی کہلاتا ہے جو کہ قانوناً، شرعاً اور اخلاقاً ہر لحاظ سے غلط ہے۔ کچھ افراد یہ بہانہ رکھتے ہیں کہ ونڈو اتنی مہنگی ہے کہ ہم اس کو خریدنے کی سکت نہیں رکھتے تو بھائی آپ لینکس استعمال کریں جو کہ مفت اور ہر لحاظ سے ونڈو سے بہتر ہے۔ یہاں میں کچھ وجوہات بیان کرتا ہوں جن کی وجہ سے میرا خیال ہے کہ آپ کو لینکس او ایس استعمال کرنا چاہیے۔

مفت: لینکس ایک بالکل مفت آپریٹنگ سسٹم ہے، آپ بے شمار لینکس ڈسٹروز میں سے اپنی پسند کی کوئی بھی ڈسٹرو آفیشل ویب سائیٹ سے ڈاؤنلوڈ کر کے اپنے سسٹم میں استعمال کر سکتے ہیں۔ یہ آپ کو چوری کی ونڈو سے نجات دلائے گی۔ اور اگر آپ ونڈو خریدنے کا ارادہ رکھتے تھے تو یہ آپ کے پیسے بچائے گی۔
محفوظ اور پائیدار: ونڈو او ایس پر آئے روز وائرسز آپ کی جان کو آئے ہوتے ہیں، ایک وائرس آپ کا سالوں کا ڈیٹا ضائع کر سکتا ہے۔ لینکس پر آپ وائرسز کو بھول جائیے یہ ایک محفوظ اور پائیدار آپریٹنگ سسٹم ہے جس پر آپ کو کسی اینٹی وائرس کی ضرورت نہیں اور وائرسز بھی آپ کو نہیں ستا سکیں گے۔
پرانے سسٹم پر بھی چلے: جب سے مائیکروسافٹ نے ونڈو ایکس پی کی سپورٹ ختم کی ہے وہ افراد جو پرانا کمپیوٹر رکھتے تھے کافی پریشانی کا شکار ہیں کیوں کہ ونڈو 10 کے لیے ایک جدید کمپیوٹر درکار ہے۔اس کے برعکس لینکس او ایس کے ہوتے ہوئے اگر آپ کے پاس جدید کمپیوٹر نہیں تو پریشانی والی کوئی بات نہیں کیوں کے لینکس کسی بھی پرانے سسٹم پر چل سکتا ہے۔
استعمال میں آسان: لینکس استعمال میں انتہائی آسان ہے۔ اس آپریٹنگ سسٹم پر ایسے شاندار ٹولز دستیاب ہیں جو کہ آپ کے گھنٹوں کے کام منٹوں میں کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ یہاں آپ کو گھنٹوں صرف کر کے ڈرائیورز ڈھونڈنے کی ضرورت نہیں، تمام ڈرائیورز پہلے سے ہی انسٹال ہوتے ہیں۔ سافٹ ویئر انسٹالیشن کے لیے تقریباً ہر ڈسٹرو میں ایپ سٹور موجود ہوتا ہے جہاں سے آپ اپنی مرضی کے سافٹ ویئر ایک کلک سے ڈاؤنلوڈ کر سکتے ہیں۔
اپڈیٹ میں آسانی: لینکس میں او ایس اور تمام انسٹالڈ سافٹ ویئر کی اپڈیٹس آپ ایک ہی جگہ سے کرسکتے ہیں اور اپڈیٹس کے دوران آپ کوئی بھی کام کر سکتے ہیں، اپڈیٹ کا تمام عمل بیک گراؤنڈ میں سرانجام پاتا ہے۔ اور ہاں یہاں ونڈو کی طرح ہر اپڈیٹ کے بعد زبردستی کمپیوٹر ری سٹارٹ نہیں ہوتا۔
کسٹمائزیشن: جیسا کہ میں پہلے ذکر کر چکا کہ لینکس آزادی کا نام ہے تو لینکس میں آپ کے پاس کسٹمائزیشن کی لامحدود چوائسز ہیں۔ آپ تھیم، آئیکن سمیت کوئی بھی چیز اپنی مرضی سے کسٹمائز کر سکتے ہیں۔
پرائیویسی: آئے روز یہ باتیں سامنے آتی ہیں کہ ونڈو آپ کی بے شمار تفصیلات مائیکروسافٹ تک پہنچاتا ہے، ونڈو 10 کے بعد تو آپ کا بے شمار ڈیٹا مائیکروسافٹ کے سرورز تک پہنچ رہا ہے۔ اس کے برعکس لینکس میں ایسا بالکل نہیں ہے، اس او ایس کا سارا کوڈ آن لائن دستیاب ہے اور عام افراد اس پر نظر رکھتے ہیں کہ کوڈ میں کوئی ایسی چیز نہ ہو جو استعمال کنندہ کی نجی معلومات خفیہ طور پر کمپنی کو بھیجتی رہے۔

لینکس کیسے؟ :

اگر مندرجہ بالا تحریر پڑھنے کے بعد آپ کا ذہن لینکس او ایس کے لیے تیار ہو گیا ہے تو پھر اس شاندار او ایس کو اپنے سسٹم میں انسٹال کرنے کے لیے آپ کو دیر نہیں کرنی چاہیے۔

لینکس کوانسٹال کرنا اور  استعمال کرنا بالکل بھی مشکل نہیں۔ لینکس کے مبتدی حضرات کے لیے بہت سی آسان لینکس ڈسٹروز دستیاب ہیں،  آپ ان میں سےکسی ایک کا انتخاب کریں۔ اس ڈسٹرو کی ویب سائیٹ سے اس کو ڈاؤنلوڈ کرلیں، ڈاؤنلوڈنگ کے بعد فلیش ڈرائیو کے اندر اس کو برن کر لیں۔ یو ایس بی سے بوٹ کریں اور انسٹال کر لیں۔ لینکس منٹ کی انسٹالیشن کا طریقہ آپ یہاں دیکھ سکتے ہیں، اوبنٹو اور اس کی قبیل کی دیگر لینکس ڈسٹروبیوشن بھی اسی طریقے سے انسٹال کی جاتی ہی۔انسٹالیشن کے دورانکسی بھی مرحلے پر مشکل پیش آئے تو آپ گوگل سے مدد لے سکتے ہیں یا پھر اس پوسٹ کے نیچے کمنٹس کیجیے اور مجھے یقیناً آپ کی مدد کر کے خوشی ہو گی۔

کیا آپ سادہ، آسان اور پُرسکوں زندگی کے خواہاں ہیں؟
اپنا ای میل ایڈریس درج کیجیے اور میرا ہفتہ وار ای میل نیوز لیٹر جوائن کیجیے

احباب کے ساتھ شیئر کیجیے

Share on facebook
فیس بک
Share on twitter
ٹوئٹر
Share on email
ای میل
فیس بک
ٹوئٹر
ای میل

اپنی رائے کا اظہار کریں