کاموں کو کامیابی کے ساتھ مکمل کرنے کا ہنر

کسی بھی نئے کام کو شروع کرنا یا نئی عادت، نئے مزاج کو اپنانا ایک مشکل کام ہے لیکن شروع کرنے سے زیادہ مشکل کام اس عادت، کام یا منصوبے کو جاری و ساری رکھنا اور کامیابی کے ساتھ مکمل کرنا۔ عموماً ہم جیسے تیسے ایک نئے کام کی داغ بیل تو ڈال دیتے ہیں لیکن چند دنوں یا ہفتوں کے بعد جب مشکلات سامنے آتی ہیں تو گبھرا کر چھوڑ دیتے ہیں۔

ہم ورزش شروع کرتے ہیں، چند دن مزا آتا ہے اور پھر ایک مشکل کام لگنے لگتا ہے، جسم میں درد رہنے لگا، ایک آدھ دن ورزش چھوٹی اور پھر کب دن ہفتوں اور مہینوں میں بدلے پتا ہی نہیں چلتا۔ بڑے چاؤ سے نیا کاروبار شروع کیا، دو چارہفتے دیکھا، گاہک نہیں آئے،اخراجات بڑھے، مشکلات میں اضافہ ہوا، چھوڑ دیا۔ انگلش یا کوئی بھی نئی زبان سیکھتے ہوئے بھی ایسے ہی ہوتا ہے، چند دنوں میں ہی ہم اہلِ زبان کی طرح بولنا چاہ رہے ہوتے ہیں لیکن جب اس میں کامیاب نہیں ہوتے، چھوڑ دیتے ہیں۔

یہی وہ چند معاملات نہیں ہیں جنہیں ہم آدھا ادھورا چھوڑ دیتے ہیں۔ ہم زندگی میں بے شمار آدھے ادھورے منصوبے اٹھائے پھرتے ہیں اور پھر انہیں یہیں کہیں چھوڑ، راہِ ملک عدم لیتے ہیں۔

میں خود اس معاملے میں بہت زیادہ جدوجہد کرتا رہا ہوں اور کر رہا ہوں۔ میں نے زندگی میں اگر کئی منصوبے کامیابی سے مکمل کیے ہیں تو بے شمار ادھورے بھی چھوڑے ہیں۔ اس سب کے دوران میں نے یہ سیکھنے کی کوشش کی کہ کیوں ہم کچھ منصوبہ جات اور کاموں کو آدھ میں چھوڑ دیتے ہیں اور کیسے ہم کسی بھی کام کو تمام تر مشکلات کے باوجود کامیابی سے مکمل کر سکتے ہیں، جو سبق ملے پیشِ خدمت ہیں۔

1 ۔ کیوں سے شروع کریں

بھلے آپ ایک نیا منصوبہ شروع کرنے جا رہے ہیں یا پھر کسی منصوبے کو آدھا چھوڑ کر بیٹھے ہیں یا پھر مشکلات کی وجہ سے آدھ میں چھوڑنے کا سوچ رہے ہیں، سب کچھ چھوڑ سب سے پہلے کیوں پر غور کریں۔ فرض کیجیے آپ نے ورزش کی عادت اپنائی، ہفتہ دس دن کامیابی سے ورزش کی اور اب چھوڑنے کا سوچ رہے ہیں تو رکیے اور غور کیجیے کہ آپ نے ورزش کیوں شروع کی تھی۔ اور یہ بھی کہ ورزش کرنا کیوں ضروری ہے اور نہ کرنے کے کیا نقصانات ہوں گے۔ آپ نے ورزش کی عادت اپنائی، یقیناً اس کے پیچھے ایک تحریک ہو گی، کوئی مقصد ہو گا، اس مقصد پر غور کیجیے۔ خود کو یاد دلائیے آپ نے ورزش کیوں شروع کی تھی۔ ہو سکتا ہے آپ بڑھاپے میں چاق و چوبند رہنا چاہتے ہوں۔ خود کو یاد دلائیے کہ اگر آپ نے ورزش چھوڑ دی تو آپ کا بڑھاپا کیسا دردناک ہو سکتا ہے۔

2 ۔ اپنی توقعات کو حقیقی بنائیں

کسی بھی نئے منصوبے کو شروع کرتے وقت اکثر ہم خود سے اور دوسروں سے غیر حقیقی توقعات وابستہ کر لیتے ہیں۔ جب ہم کاغذ پر منصوبہ بندی کر رہے ہوتے ہیں تو ہم اپنی ہمت اور وسائل کو مدِنظر رکھنے بِنا بہت بڑے بڑے منصوبہ جات تیار کر لیتے ہیں۔ اگر آپ نے یہی غلطی کی ہوئی ہے اس کی وجہ سے اب کام جاری رکھنا مشکل ہو رہا ہے تو اپنے منصوبے پر نظرثانی کر لیں۔ اپنے منصوبے میں سے غیر حقیقی چیزیں نکال کر اسے آسان بنائیں۔ مثال کے طور پر آپ ایک نئی زبان سیکھنا چاہتے ہیں اور آپ اس زبان میں مہارت حاصل کرنے کے لیے روزانہ چار گھنٹے مطالعہ کریں گے۔ اب جب کام شروع کیا تو پتا چلا کہ آپ کی نوکری، بیوی بچوں اور گھر کی ذمہ داریوں، سونے جاگنے کے اوقات کو نکال کے آپ کے پاس صرف ایک گھنٹہ بچتا ہے تو بجائے یہ کہ آپ اس منصوبے کو خیرباد کہیں، اس میں ترامیم کر لیں۔ کوئی مضائقہ نہیں اگر آپ ایک زبان جو دو سال میں سیکھنے جا رہے تھے، اسے آٹھ سالوں میں سیکھ لیں۔ کبھی نہ سیکھنے سے دیر سے سیکھنا بہتر ہے۔

یہ بھی پڑھیں :   ذمہ دار شخص کیسے بنا جائے؟

3 ۔ نہ کہنے کا ہنر سیکھیں

ہم اکثر ایک کام کو اس لیے بھی مکمل نہیں کر پاتے کیوں کہ ہمارا وقت اور طاقت وہ لوگ لے رہے ہوتے ہیں جنہیں ہم نہ نہیں کہ پاتے۔ مثال کے طور پر آپ نے ایک منصوبہ بنایا کہ دو سال کے اندر آپ نے اپنی نوکری کے ساتھ ساتھ جزوقتی آن لائن کاروبار کرتے ہوئے اضافی آمدنی کا ذریعہ پیدا کرنا ہے۔ اس مقصد کے لیے آپ نے روزانہ شام کو تین گھنٹے مختص کر لیے لیکن ان تین گھنٹوں کے دوران آپ کے وہ دوس ٹپک پڑتے ہیں جنہیں آپ نہ نہیں کہ پاتے اور اسی وجہ سے چند دنوں میں ہی آپ کا یہ منصوبہ آدھا ادھور درمیان میں ہی رہ جاتا ہے۔ نہ کہنے کا ہنر سیکھیے، نہ کہنا ایک مزاج ہے اور اگر آپ زندگی میں آگے بڑھنا چاہتے ہیں تو آپ کو طوعاً وکرعاً یہ ہنر سیکھنا ہی پڑے گا۔

4 ۔ چلتے رہیے

بھلے نیا منصوبہ شروع کرتے وقت ہم میں بے شمار تحریک اور طاقت ہو، سفر میں جب مشکل موڑ آتے ہیں تو ہم تھک جاتے ہیں۔ ایسا سب کے ساتھ ہوتا ہے، لیکن وہ لوگ جو اپنے سفر کو ادھورا چھوڑ دیتے ہیں اور وہ جو منزل کو پا لیتے ہیں ان میں بنیادی فرق نہ رکنے کا ہوتا ہے۔ اگر آپ اپنے منصوبے کو کامیابی سے مکمل کرنا چاہتے ہیں تو اس کے لیے ضروری ہے کہ آپ چلتے رہیے۔ اگر آپ بھاگ رہے ہیں اور تھکاوٹ کا شکار ہو گئے ہیں تو اپنی رفتار کو کم کر لیجیے، بھاگنے نہیں ہو رہا چلنا شروع کر دیجیے، چلنے نہیں ہو رہا گھسٹتے رہیے،کچھوے کی چال چلتے رہیں لیکن رکیے مت۔ رفتار کو کم کرنے سے آپ کی طاقت بھی بحال ہو گی اور سفر بھی جاری و ساری رہے گا۔

5 ۔ کیا کرنا چاہیے اور کیا کرنا چاہتے ہیں میں فرق کرنا سیکھیں

ہم سب زندگی میں بہت کچھ کرنا چاہتے ہیں۔ لیکن ضروری نہیں کہ جو کچھ آپ کرنا چاہتے ہیں، اسے کرنا بھی چاہیے۔ اگر آپ نے زندگی میں غیر ضروری منصوبہ جات گھسا رکھے ہیں اور اس کی وجہ سے آپ اپنے ضروری کاموں اور منصوبہ جات کو بھی وقت نہیں دے پا رہے تو یہی وقت ہے، انہیں زندگی سے نکال باہر کریں۔ ہم اکثر زندگی میں بہت سے کاموں، چیزوں اور لوگوں کو اس لیے نہیں چھوڑ پاتے کیوں کہ ہم نے کسی زمانے میں ان پر پیسہ یا وقت صرف کیا ہوتا ہے۔ ضروری نہیں کہ جو غلطی آپ نے زندگی میں ایک بار کی تھی اسے ساری زندگی ساتھ لے کے چلنا ہے۔ رکیے، سوچیے اور تمام غیر ضروری چیزوں کو نکال دیجیے تا کہ آپ ضروری چیزوں اور کاموں کو وقت دے سکیں۔

کیا آپ سادہ، آسان اور پُرسکوں زندگی کے خواہاں ہیں؟
اپنا ای میل ایڈریس درج کیجیے اور میرا ہفتہ وار ای میل نیوز لیٹر جوائن کیجیے

احباب کے ساتھ شیئر کیجیے

Share on facebook
فیس بک
Share on twitter
ٹوئٹر
Share on google
گوگل پلس
Share on email
ای میل
فیس بک
ٹوئٹر
گوگل پلس
ای میل

اپنی رائے کا اظہار کریں